پاکستان کے حارث رؤف (2R) بدھ (30 اگست) کو ملتان کے ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میں پاکستان اور نیپال کے درمیان ایشیا کپ 2023 کے میچ کے دوران نیپال کے عارف شیخ (تصویر میں نہیں) کی وکٹ لینے کے بعد ساتھی ساتھیوں کے ساتھ جشن منا رہے ہیں۔ - اے ایف پی


دنیا کے نمبر ایک بلے باز بابر اعظم اور افتخار احمد کی شاندار سنچریوں کی بدولت پاکستان نے بدھ کو ملتان میں ایشیا کپ کے افتتاحی میچ میں نیپال کو 238 رنز سے شکست دے دی۔


کپتان اعظم نے اپنی 19ویں ون ڈے انٹرنیشنل (ODI) سنچری کے لیے 131 گیندوں پر 151 رنز بنائے جبکہ احمد نے اپنی پہلی سنچری 71 گیندوں میں ناقابل شکست 109 رنز بنائے جب پاکستان نے 50 اوورز میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 342 رنز بنائے۔


اس کے بعد ہوم ٹیم نے نیپال کو 23.4 اوورز میں محض 104 رنز پر ڈھیر کر دیا جس میں لیگ اسپنر شاداب خان نے 4-27 جبکہ حارث رؤف کی تیز رفتار جوڑی نے 2-16 اور شاہین شاہ آفریدی نے 2-27 وکٹیں لیں۔


صرف سومپال کامی (28)، عارف شیخ (26) اور گلسان جھا (13) نے ڈبل فیگرز میں جگہ بنائی کیونکہ وہ پاکستان کے بہت زیادہ باولنگ اٹیک کے خلاف جدوجہد کر رہے تھے۔


اس جیت نے پاکستان کو، جو گزشتہ ہفتے ون ڈے رینکنگ میں عالمی نمبر ایک پر پہنچ گیا تھا، ہفتے کے روز پالے کیلے میں روایتی حریف بھارت کے خلاف ہائی پروفائل مقابلے کے لیے ایک مثالی آغاز اور ٹیون اپ فراہم کرتا ہے۔


ایشیا کپ اس سال ہائبرڈ ماڈل پر کھیلا جا رہا ہے جس میں پاکستان چار اور سری لنکا نو میچوں کی میزبانی کر رہا ہے جب بھارت نے سیاسی کشیدگی کی وجہ سے پاکستان کا دورہ کرنے سے انکار کر دیا تھا۔


پاکستان، بھارت اور نیپال گروپ اے میں جبکہ ٹائٹل ہولڈرز سری لنکا، بنگلہ دیش اور افغانستان گروپ بی میں ہیں۔ سری لنکا اور بنگلہ دیش جمعرات کو پالے کیلے میں مدمقابل ہوں گے۔


پہلی بار ایشیا کپ میں کھیلنے والے نیپال نے 28ویں اوور میں گھریلو ٹیم کو 124-4 تک محدود رکھنے کے لیے اچھی باؤلنگ کی تھی لیکن آخری اوورز میں اعظم اور احمد کے حملے کے خلاف وہ بے خبر رہے۔


اس جوڑی نے پانچویں وکٹ کے لیے 131 گیندوں پر 214 رنز جوڑے، جس نے پاکستان کو ایک مضبوط مجموعہ تک پہنچا دیا۔


اعظم نے 14 چوکے اور چار چھکے لگائے جبکہ احمد نے 11 چوکے اور چار چھکے لگائے جس سے پاکستان کو آخری 10 اوورز میں 129 رنز بنانے میں مدد ملی جس میں آخری پانچ میں 67 رنز بھی شامل تھے۔


اعظم کو 55 کے سکور پر ڈراپ کر دیا گیا جب کرن چھتری نے کیچ اینڈ بولڈ کا موقع دیا، جبکہ نیپال کی گراؤنڈ فیلڈنگ بھی اکثر خراب ہو جاتی ہے۔


پاکستان نے چھٹے اوور میں اوپنر فخر زمان کو 14 کے سکور پر کھو دیا، جبکہ امام الحق پانچ رنز پر رن آؤٹ ہو گئے اور پاکستان کو 25-2 کے سکور پر چھوڑ دیا۔


اعظم نے محمد رضوان (44) کے ساتھ تیسری وکٹ کے لیے 86 رنز جوڑے، اس سے قبل رضوان بھی رن آؤٹ ہو گئے۔ آغا سلمان پانچ رنز بنا کر گر گئے، اعظم اور احمد کو ریسکیو آپریشن کرنے کے لیے چھوڑ دیا۔


احمد کا پچھلا بہترین ون ڈے اسکور اس سال کراچی میں نیوزی لینڈ کے خلاف ناٹ آؤٹ 94 رنز تھا۔


نیپال کے لیے تیز گیند باز کامی 2-85 کے ساتھ بہترین رہے۔